اسلام آباد کے اسلامک یونیورسٹی میں دو طلباء تنظیموں میں تصادم

ایک طالب علم طفیل ہلاک، 13 دیگر طلباء زخمی؛ یونیورسٹی میں رینجرز تعینات

بام جہان رپورٹ

اسلام آباد کی انٹرنیشنل اسلامک یونیورسٹی میں دو طلبہ تنظیموں میں تصادم کے نتیجے میں ایک طالب علم مبینہ طور جاں بحق اور 13 زخمی ہوگئے۔

پولیس کے مطابق تصادم میں طفیل نامی طالب علم جن کا تعلق گلگت بلتستان سے بئایا جاتا ہے، زخمی ہوا جو بعد ازاں چل بسا۔

واقعہ کتب میلہ کی تقریب کے دوران پیش آیاجب جماعت اسلامی کے ذیلی تنظیم اسلامی جمیعت طلباٰء کی تقریب پرمبینہ طور پرسرائیکی اسٹوڈنٹ کونسل نے حملہ کیا.۔

جماعت اسلامی کے ترجمان راشد عمر اولکھ نے میڈیا کو بتایا کہ کہ حملے کے وقت جماعت اسلامی کے نائب امیر لیاقت بلوچ تقریب سے خطاب کررہے تھے جو حملے میں بال بال بچ گئے۔ انہیں عقبی دروازے سے بحفاظت نکال لیا گیا-

فائرنگ کا سلسلہ وقفے وقفے سے جاری ہے جس میں 13 طلباءکے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں-

واقعہ کے بعد رینجرزکو طلب کرلیاگیاہے-

اسلام آباد کے ڈپٹی کمشنر حمزہ شفقت نے واقعے اور ایک طالب علم کے جان بحق ہونے کی تصدیق کیں۔

انھوں نے بتایا کہ اسلام اباد کی انتظامیہ نےیونیورسٹی میں پولیس اور مجسٹریٹس تعینات کردیے ہیں جبکہ رینجرز کو بھی طلب کرلیا گیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ یونیورسٹی کےکمپاؤنڈ میں تلاشی مکمل کرلی گئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں