Winter-sports 272

پھنڈر سرمائی کھیلوں کا میلہ اختتام پذیر، یاسین کی ٹیمیں فاتح


غذر بلوسم ان کی ٹیم رنر آپ رہی۔ مشہور روایتی  کھیل ژیکن غال   کے مقابلے میں پھنڈر نے فتح حاصل کی۔


رپورٹ: عنائیت ابدالی


پھنڈر سرمائی کھیلوں کے مقابلے کی فاتح ٹیمں۔ فوٹو شان ایم خان

پھنڈر (غذر) : دو روزہ  سرمائی کھیلوں کا میلہ  پھنڈر کے مقام پر ہفتہ کے دن  اختتام پذیر ہوا جس میں یاسین جانباز خواتین اور مردوں کی ٹییں  آئس ہاکی کے چمپین قرار پائے۔ جبکہ غذر بلوسم ان کی ٹیم رنر آپ رہی۔ قدیم الایام  سے  مشہور روایتی  کھیل ژیکن غال   کے مقابلے میں پھنڈر نے فتح حاصل کی۔


اختتامی تقریب میں گلگت بلتستان اسمبلی کے ڈپٹی سپیکر نذیر احمد ایڈووکیٹ مہمان خصوصی تھے۔ جبکہ وزیر خزانہ جاوید منوا، مشیر قانون سید سہیل عباس ، انسانی حقوق کمیشن پاکستان  کے رابطہ کار برائے گلگت بلتستان اسرار الدین اسرار،  سماجی کارکن مہناز پروین، شان ایم خان ، ڈپٹی کمشنر غذر و دیگر سرکاری اہلکاروں اور مقامی عمائدین نے بھی شرکت کی۔


تحصیل پھنڈر کے مختلف علاقوں سے  تماشائیوں جن میں خواتین  بھی شامل تھے  کی بڑی تعداد  نےبھرپور شرکت کیں  اور کھیلوں کے مقابلوں اور ثقافتی رنگ سے لطف اندوز ہوئے۔

فیسٹیول غذر سپورٹ نیٹ ورک ( جی ایس این) کی  سر پرستی میں  ہوا ۔جبکہ چھشی یوتھ آرگنائزیشن ،پھنڈر یوتھ اور این بی وائی اے ، آغاخان یوتھ اینڈ سپورٹس بورڈ پھنڈر اور گلاغمولی کا بھر پور تعاون رہا۔

ڈپٹی سپیکر نذیر احمد ایڈووکیٹ نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا  کہ سیاحت کے لحاظ سے پھنڈر  کا شمار دنیا کے بہترین علاقوں میں ہوتا ہے۔

انہوں نے یقین دہانی کیا کہ ان کی حکومت پھنڈر کو گلگت بلتستان میں مثالی تحصیل بنائے گی۔ اس کی عملی مثال گلگت شندور روڑ کی منظوری ہے جو گلگت بلتستان کا سب سے بڑا پروجیکٹ ہے۔اس کی تکمیل کے بعد یہاں کاروبار اور ملازمتوں کے بے شمار مواقع پیدا ہوں گے اور مستقبل میں لوگ ملازمت کرنے پھنڈر آئیں گے۔

نذیر ایڈووکیٹ نے  کہا کہ "میرے دروازے سب کےلیئے کھلے ہیں۔ حلقے کے منتخب نمائندے کی حیثیت سے میں آپ کے حقوق کا محافظ ہوں میرے ہوتے ہوئے کوئی زمینوں پہ قبضہ نہیں کرسکے گا”۔ 

انہوں نے مزید کہا کہ  وہ پراجیکٹ کے لئے زمینوں کی خریداری اور معاوضہ اور دیگر معاملات پر کام کر رہے ہیں ۔

مخالفین پر تنقید کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ چند مسترد شدہ اور شکست خوردہ سیاست دان عوام کو بےوقوف بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

ڈپٹی اسپیکر نے کہا کہ تحصیل پھنڈر کے نوجوانوں نے اپنی مدد آپ کے تحت کم وقت میں یہ پروگرام کیا جس پہ  وہ شاباشی کے مستحق ہیں۔


انہوں نے  جی ایس این کے سرگرمیوں  کی تعریف کی اور  ان کا شکریہ ادا کیا اور کہا  کہ ان کی کارکردگی قابل ستائش ہے۔پچھلے سال خلتی  کا میلہ کلینڈر میں شامل کیا گیا تھا مگر اس سال موسمی حالات کی وجہ سے  فیسٹول نہیں  ہو سکا۔ جس کے فورا بعد جی ایس این نے  اپنی مدد آپ کے تحت  علاقے کی تاریخ میں  اپنی نوعیت کا پہلا  پرو گرام ت منعقد  کیا۔

نذیر نے یقین دلایا کہ اگلے سال  یہاں پر گلگت بلتستان سطح  کے پروگرام منعقد  کروائیں گے۔

” گلگت بلتستان  سرمائی کھیلوں   کے لئے بہت موزوں ہے اسلئے میں پر امید ہوں  اور کھیلوں کا مسقبل تابناک   ہے۔”

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ گلگت بلتستان کے نوجوان آج متحرک ہیں اور  عالمی سظح پر  مقابلوں میں شرکت کرنے کے قابل ہوگئے ہیں۔انہوں نے نوجوانوں پر زور دیا کہ وہ ترقی کے   جدید تصور  کو آگے بڑھائیں ۔ وزیر خزانہ جاوید منوا نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت گلگت بلتستان میں   سیاحت اور سرمائی  کھیلوں کو فروغ د ینے  پر بہت زور دے  رہی  ہے ۔ اس  سلسلے میں ہم سے جو بھی ہو سکا  کوششیں  کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کے دروازے  سب کے لئے کھلے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں