32

شہر کے تر قیا تی منصو بے


ڈاکٹر عنا یت اللہ فیضی


پشاور کا شہری در جہ بڑ ھا نے کے لئے صو بائی حکومت نے پشاور اپگریڈیشن پلا ن کے تحت کئی اہم منصو بے شروع کئے ہیں اور کئی بڑے منصو بے مو جو د ہ ما لی سال کے اندر روبہ عمل لائے جا رہے ہیں اخبارات میں آنے والی خبروں کے مطا بق وزیر اعلیٰ محمود خان نے اس سلسلے میں خصو صی ہدایات دی ہیں کہ پشاور میں شہری سہو لیات کے منصو بوں کی تکمیل میں کوئی کو تا ہی نہ کی جا ئے کام کی رفتار کے ساتھ کام کے معیار کو بھی پیش نظر رکھا جا ئے ۔

حکومت کی طرف سے فنڈ فراہمی، کیش فلو میں کوئی کمی نہیں آئے گی تر قیا تی منصو بوں کے ساتھ ساتھ حکومت سما جی برائیوں سے بھی شہر کو پا ک کرنے پر سنجیدہ گی کے ساتھ کام کر رہی ہے نشے کے عادی افراد کی گرفتاری اور علا ج کے ذریعے ان کی بحا لی کے جا مع منصو بے پر کام ہو رہا ہے شہر کی انتظا میہ نے پیشہ ور بھکا ریوں کے خلا ف اپنی مہم میں بھکاریوں کے کئی اڈوں پر چھا پہ مارا ہے بھکا ریوں کے پیشے سے بھتہ لینے والے بڑے مگر مچھوں پر ہاتھ ڈالنے کا سلسلہ جاری ہے۔

 ایک بڑا کام یہ بھی ہو رہا ہے کہ رہا ئشی بستیوں کے اندر غیر قا نونی تجا رتی سر گر میوں پر پا بندی کے قانون پر عملدر آمد کے لئے مقا می انتظا میہ کو متحرک کیا گیا ہے اس حوالے سے حکومتی ہدایات بھی مو جو د ہیں، قواعد و ضوابط بھی مو جو د ہیں عدالتی احکا مات کا پورا ریکارڈ دستیاب ہے لیکن رہا ئشی بستیوں میں کلینک، ہاسٹل، سکول، کا لج اور یونیورسٹیوں کے کیمپس لا ئے گئے ہیں۔

 پشاور کا نقشہ جس منصو بے نے بدل کر رکھ دیا ہے اور با ہر سے شہر آنے والوں کو خوش گوار حیرت میں ڈال دیا ہے وہ بی آر ٹی کا منصو بہ ہے اس منصو بے نے شہر کو ٹرانسپورٹ کی صاف ستھری سہو لت مہیا کی ہے اور پشاور کو دنیا کے تر قی یافتہ شہروں کی صف میں جگہ دی ہے

 

چراغ تلے اندھیرا کے مصداق حکومت کی نا ک کے نیچے یہ سب کچھ ہو رہا ہے اور قانون خا مو ش ہے تا ہم خا مو شی کو توڑ تے ہوئے ڈویژن اور ضلع کی انتظا میہ کو متحرک کیا گیا ہے اس پر کا م جا ری رہا تو شہریوں کی جا ن میں جا ن آئے گی اور رہا ئشی بستیوں سے تجا رتی سر گر میوں کا صفا یا ہو جا ئے گا۔

 پشاور کا نقشہ جس منصو بے نے بدل کر رکھ دیا ہے اور با ہر سے شہر آنے والوں کو خوش گوار حیرت میں ڈال دیا ہے وہ بی آر ٹی کا منصو بہ ہے اس منصو بے نے شہر کو ٹرانسپورٹ کی صاف ستھری سہو لت مہیا کی ہے اور پشاور کو دنیا کے تر قی یافتہ شہروں کی صف میں جگہ دی ہے نئے منصو بے کے تحت بی آر ٹی کے فیڈر روٹوں پر کام ہورہا ہے جی ٹی روڈ کے ساتھ پبی تک بی آر ٹی کا فیڈر روٹ تکمیل کے مرا حل میں ہے بسیں بھی پشاور پہنچ گئی ہیں، ورسک روڈ، چارسدہ روڈ، اور جمرود روڈ کے فیڈر روٹوں پر کام مکمل ہونے کے بعد تما م نواحی بستیوں کو شہر کے مر کزی راستوں کی طرح بی آر ٹی کی سہو لت مل جا ئیگی ۔

ایک بڑا منصو بہ حیات آباد ٹریل کے نا م سے آیا ہے اس میں جا کنگ ٹریک، سائیکل ٹریک، ٹک شاپ، واش روم، لائبریری، چلڈرن پارک، بیڈ منٹن اور باسکٹ بال کورٹس بھی رکھے گئے ہیں 6کلو میٹر کے اس ٹریل کی لا گت 80کروڑ روپے ہو گی۔

 ایک اہم منصو بہ اندرون شہر سڑکوں اور گلیوں کی کشاد گی اور تزئین وارائش کا ہے اس منصو بے کے تحت کا بلی دروازے سے چوک یاد گار، گھنٹہ گھر سے ہشتنگری اور اندر شہر سے آسامائی تک گذر گا ہوں کی سجا وٹ اور خوبصورتی میں اضا فہ کیا جا ئے گا۔

 اگر جدید دور کے تقا ضوں کے مطا بق شہری منصو بہ بندی پر عمل کر کے پشاور شہر اور اسکی نو احی بستیوں کو ٹرانسپورٹ اور دیگر شہری سہو لتوں کے مر بوط نظا م سے منسلک کیا گیا تو یہ مو جو دہ حکومت کا بڑا کار نا مہ ہو گا۔

 شہر کے مضا فات میں با چا خان چوک، سکیم چوک، شاہی باغ، وزیر باغ اور چارسدہ روڈ کی تو سیع وارائش بھی اس منصوبے کا حصہ ہے نیز گورا قبرستان سے حیات آباد کی طرف جا تے ہوئے جو بستیاں آتی ہیں ان کو ٹاون سے ملا نے کے لئے 6رابطہ سڑ کوں کی تو سیع بھی منصو بے میں شا مل ہے۔

 اس طرح پا و کہ، سوڑیزئی، ریگی اور قریبی دیہات کے باسیوں کو ٹرانسپورٹ کی بہتر سہو لتیں ملیں گی شہری منصو بہ بندی جدید دور میں اعلیٰ تعلیم کے نصاب میں شا مل ہے، انجینئرنگ یونیورسٹیوں کے علا وہ عام یو نیورسٹیوں کے شعبہ ہائے جعرافیہ میں بھی اربن پلا ننگ کا کورس پڑھا یا جا تا ہے۔  اگر جدید دور کے تقا ضوں کے مطا بق شہری منصو بہ بندی پر عمل کر کے پشاور شہر اور اسکی نو احی بستیوں کو ٹرانسپورٹ اور دیگر شہری سہو لتوں کے مر بوط نظا م سے منسلک کیا گیا تو یہ مو جو دہ حکومت کا بڑا کار نا مہ ہو گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں