68

وزیر اعلی گلگت بلتستان خالد خورشید کی لندن یونیورسٹی کی ڈگری جعلی نکلی


)اسلام آباد(نا مہ نگار


اعلی تعلیمی کمیشن (ایچ ای سی) نے یونیورسٹی آف لندن کی طرف سے مہیا کی جانے والی درج ذیل تصدیقی معلومات کی بنیاد پر وزیرِ اعلی محمد خالد خورشید کو 23 ستمبر 2022 کو جاری کی جانے والی سندِ معادلہ (Equivalence Certificate) کومنسوخ کر دیا ہے۔ ایچ ای سی کی جانب سے کہا گیا ہے کہ امیدوار محمد خالد خورشید کی ایل ایل بی کی ڈگری کے جعلی ہونے کے حوالے سے ایچ ای سی کو موصول ہونے والے ایک سوال کی بنیاد پر ایچ ای سی نے ڈگری پر نظر ثانی کی اور ازسر نو پرکھنے کا عمل شروع کیا۔

ایچ ای سی نے پالیسی کے مطابق یونیورسٹی آف لندن سے درخواست کی کہ ڈگری، ٹرانسکرپٹ اور امیدوار کی طرف سے ایچ ای سی میں جمع کیے جانے والے تصدیقی مراسلے پر مبنی مہر بند لفافے کی تصدیق کی جائے۔

جوابا یونیورسٹی آف لندن نے تصدیق کی کہ: لفافہ اور اس کے مشمولات (ڈگری سرٹیفیکیٹ کی کاپی، لیٹر آف سرٹیفیکیشن اور ٹرانسکرپٹ) یونیورسٹی آف لندن کی جانب سے جاری نہیں کیے گئے۔

امیدوار کی طرف سے ایچ ای سی میں جمع کیے جانے والے بیان حلفی کی شق 7 (یعنی یہ کہ اگر کسی بھی مرحلے پر یہ بات سامنے آئی کہ میری تعلیمی دستاویزات مثلا ڈگری، ٹرانسکرپٹ جعلی ہیں یا یہ ایچ ای سی کے قواعد سے مطابقت نہیں رکھتیں تو ایچ ای سی پاکستان مجھے جاری کردہ لیٹر کو جلد از جلد منسوخ کر سکتا ہے۔)کے مطابق محمد خالد خورشید خان کی ڈگری کو 12مئی 2023کو منسوخ کر دیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں